متحدہ عرب امارات اور اسرائیل کے درمیان براہ راست ٹیلیفون سروس کا آغاز

اسرائیل اور متحدہ عرب امارات کے درمیان براہ راست ٹیلی فون سروس کا آغاز

 متحدہ عرب امارات اوراسرائیل نے براہ راست ٹیلیفون سروس کا آغاز کر دیا۔ اماراتی وزیر خارجہ شیخ عبداللہ بن زاید اور اسرائیلی ہم منصب غابی اشکنازی نے ٹیلیفون سروس کا افتتاح کیا۔شیخ عبداللہ بن زاید اور اسرائیلی وزیر خارجہ غابی اشکنازی نے جلد ملاقات پر بھی اتفاق کیا۔ تفصیلات کے مطابق یو اے ای اوراسرائیل نے براہ راست ٹیلیفون سروس کا آغاز کر دیا ہے۔دونوں ملکوں کے وزراء خارجہ نے ٹیلیفون لنک کا باقاعدہ افتتاح کر دیا ہے۔اس سے قبل دونوں ممالک کے شہریوں کے لیے ٹیلی فونک رابطہ ممکن نہیں تھا۔اسرائیلی وزیر مواصلات نے دونوں ممالک کے درمیان تعلقات قائم کرنے کے حوالے سے اس پیش رفت کو اہم قرار دیا ہے۔ امریکی صدر کی جانب سے اعلان کیا گیا تھا کہمتحدہ عرب امارات اوراسرائیل کے درمیان امن معاہدہ ہوا دونوں ممالک کے تعلقات مکمل طور پر بحال ہوگئے، جلد براہ راست پروازوں کا آغاز ہوگا، اگلے ہفتے دونوں ممالک کے وفود ملاقات کر کے اہم معاہدے طے کریں گے۔

  

غیر ملکی خبر رساں اداروں کی جانب سے فراہم کردہ تفصیلات کے مطابقمتحدہ عرب اماراتاوراسرائیل کے درمیان امن معاہدہ طے پاگیا ہے۔ امریکی صدر کی جانب سے کیے گئے ٹوئٹس میں اعلان کیا گیا کہ متحدہ عرب امارات اوراسرائیل کے درمیان امن معاہدہ طے پاگیا۔ امریکی صدر اور میڈیا کی جانب سے اس معاہدے کو تاریخی قرار دیا جا رہا ہے۔ جبکہ غیر ملکی میڈیا دعویٰ کر رہا ہے کہ اس معاہدے کے بعد دونوں ممالک کے تعلقات مکمل طور پر بحال ہو جائیں گے۔دونوں ممالک کے درمیان براہ راست پروازیں چلیں گی، جبکہ سفارتی سطح پر جلدمذاکرات کا آغاز ہوگا۔ مزید دعویٰ کیا جا رہا ہے کہ اس معاہدے کے بعداسرائیل ویسٹ بینک اور وادی اردن کے علاقوں پر قابض ہونے کے فیصلے سے فی الحال پیچھے ہٹ گیا ہے۔ اس حوالے سےامریکی صدر کی جانب سے کہا گیا ہے کہ اس معاہدے سے مشرق وسطیٰ میں امن کی بحالی ممکن ہوگی۔اسرائیل اورمتحدہ عرب اماراتکے وفود اگلے ہفتے ملاقات کریں گے۔ ملاقات کے دوران اہم دو طرفہ معاہدے کیے جائیں گے۔ دونوں ممالک سیکورٹی، معیشت اور دیگر شعبوں میں تعاون کے حوالے سے معاہدے طے کریں گے۔ گزشتہ ہفتےاسرائیل اورمتحدہ عرب امارات کے درمیان ایک تاریخی امن معاہدہ ہوا جس بعد مشرقی وسطیٰ کے دونوں اہم ملکوں کے درمیان سفارتی تعلقات معمول پر آسکیں گے۔بین الاقوامی میڈیا رپورٹس کے مطابق معاہدے کے تحتاسرائیل مغربی کنارے میں واقعفلسطینکے ان علاقوں پر دعویٰ سے دستبردار ہوگا جنہیں وہ ضم کرنا چاہتا تھا۔شیخ محمد بن زایدالنہیان نے کہا تھا کہ صدرٹرمپ اوروزیراعظم نیتن یاہو کے ساتھ ٹیلی فونک گفتگو ہوئی۔اسرائیل مغربی کنارے کے مزید علاقوں کو اپنے ساتھ شامل نہیں کرے گا۔ یو اے ای اوراسرائیلکے درمیان سفارتی تعلقات قائم کرنے پر بھی اتفاق ہواخیال رہے کہ متحدہ عرب امارتاسرائیل سے سفارتی تعلقات قائم کرنے والا تیسرا خلیجی عرب ملک بن گیا۔امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کا کہنا تھا کہ اسرائیل اور یو اے ای میں تاریخی امن معاہدہ ہو گیا۔ اسرائیل اور عرب امارات کے وفود اگلے ہفتے ملیں گے۔

Source 

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *